Leave a comment

وہ جیتے نہیں ہم ہارے ہیں

پاکستان سپر لیگ کے بعد عوام بہت شدت سے پاکستان بھارت ٹاکرے کے منتظر تھے۔ ان کا خیال تھا کہ اب تو بھارت کے سامنے آنے کی دیر ہے، سب کس بل اس کے نکال دیں گے ہمارے شاہین۔ مگر ہوا اس کے برعکس۔ بادی النظر میں تو یہ محسوس ہوتا ہے ہ ہماری ٹیم برا کھیلی اور وہ اچھا کھیل کے جیتے مگر ایسا کچھ نہیں ہے۔ حقیقت اس سے بہت مختلف ہے۔
پاکستان ٹیم کا پختہ ارادہ تھا کہ بھارت کو زیر کرنا ہے اور پچھلے تمام حساب بیباک کرنے ہیں۔ تیاری مکمل تھی۔ سب کھلاڑیوں نے مشق مکمل کر لی تھی۔ تاہم ہوا یہ کہ جب ٹاس ہوا تو کھلاڑیوں کے نام پڑھے گئے تو ایک کھلاڑی کا نام برما تھا(بمرا کو آفریدی جلدی میں برما پڑھ گئے) ویسے بھی نام انگریزی میں لکھے تھے سو اتنا مغالطہ ہونا کوئی تعجب کی بات نہیں۔ آفریدی جتنے اچھے ہیں اس سے کہیں زیادہ مسلمان۔ برما کا نام پڑھنا تھا کہ ان کا خون کھول اٹھا۔انھیں برما کے مسلمانوں پر مظالم یاد آ گئے۔ٹیم سے مشورہ کیا تو سب نے کہا کہ برما کے مسلمانوں پر مظالم دنیا کے سامنے لانے کا اس سے اچھا موقع نہیں ہے۔ پاکستان کی پہلی باری آئی۔ طے یہ ہوا تھا کہ سب نے برما کو ہی وکٹ دینی ہے تا کہاس کے مظالم ساری دنیا دیکھ سکے۔
حفیظ نےپہلے اوور میں آئوٹ نہیں ہونا تھا مگر نہرا نے نیچ حرکت کی۔ پچھلی بال اٹھی ہی نہیں تھی اور وکٹ والی بیٹھی ہی نہیں۔ یہ ھندو بنئے فراڈ سے باز نہیں آتے۔خرم منطور کا یہ پہلا میچ تھا۔تاہم بڑے مقصد قربانیاں بھی بڑی مانگتے ہیں۔ اس نے اس آزمائش پر لبیک کہا اور ہر بال پر کوشش کی کہ وہ آئوٹ ہو جائے مگر انسان تو صرف کوشش ہی کر سکتا۔شرجیل ابھی تک پاکستان سپرلیگ کے اثر سے ہی نہیں نکلے تھے کہ دبوچے گئے تاہم وہ برما کے ہاتھوں ہی شہید ہوئے سو وہ تو آئوٹ ہو کے بھی ناٹ آئوٹ ہے۔ بلکہ ایسے آئوٹ پر تو سو ناٹ آئوٹ قربان۔ شعیب ملک کو بوپارہ یاد آ رہا تھا۔ اس نے اس سے بدلہ لینا تھا مگر جب وہ تھا ہی نہیں تو رکنے کا فائدہ۔عمر اکمل نے تو اپنے حصے کے رنز پہلے ہی پی ایس ایل میں بنا لئے تھے۔ زیادہ رنز سے نظر لگ جاتی ہے اور پھر کریم چہرے پر نہیں ٹکتی۔ اسے تو درویش بابا نے کہا’جا دے جا’ اور اس کے پاس وکٹ کے سوا کیا تھا سو وہی دیتا بن مگر امید ہے کہ درویش بابا کی بات مان کر وہ خسارے میں نہیں رہے گا ۔پاکستان ٹیم کے ساتھ چپکا ہی رہے گا۔آفریدی نے بھی صرف برما کے ہاتھوں آئوٹ ہونا تھا مگر دھونی کو بھی ٹیم کے ارادوں کا علم ہو گیا۔ جب برما تھا ہی نہیں تو درویش کے ہاتھوں ہی آفریدی کا قصہ تمام ہوا۔ بیالیس پر چھ آئوٹ ہوئے تو سرفراز کو اپنی باری کی پڑ گئی۔ سرفراز دھوکہ دینے ہی لگا تھا کہ اندر سے پیغام آیا کہ زیادہ رنز نہیں کرنے۔ سرفراز کے کہا کہ ابھی کونسا زیادہ ہوئے ہیں تو جواب آیا کہ اگر بھارتیوں نے ہماری چال ہمیں پر الٹ دی تو پھر کیا ہو گا۔ اپنی باری تم نیٹ میں پوری کر لینا۔ شرجیل اور خرم تمھیں دو اوورز زیادہ کرائیں گے۔ جتنے مرضی چوکے چھکے مار لینا۔ یہ پیشکش سرفراز کو پسند آئی اور وہ آئوٹ ہوا۔ بائولرز سے مزید سکور کھینچا اور یوں مجموعہ بیاسی تک جا پینچا۔ پاکستان ٹیم کو دکھ اس بات کا تھا کہ ان کی حکمت عملی بہت حد تک ناکام رہی۔ برما کو صرف ایک وکٹ ملی۔ مگر جنھوں نے خرم منظؤر کو بیٹنگ کرتے دیکھا ان کو برما کے مظالم کا کچھ اندازہ تو ہوا ہو گاکہ کبھی گیند اس کی ٹانگ پر مارتا ہے اور کبھی بازو پر۔انھوں نے فیصلہ کیا کہ اب میچ جیتنے کے لئے کھیلنا ہے۔ دھونی کو اس کے دھوکے کی سزا دینی ہے۔
جب بھارت کی باری آئی تو روہت شرما پہلی بال پو ہی آئوٹ تھا مگر امپائر نے وہ ٹرائی بال قرار دی۔ مگر یہ دھاندلی بھی کام نہ آئی۔ اگلی پر پھر راندہ درگاہ ہوا۔ یہی نہیں راہانے اور رائنا بھی پویلین واصل ہوئے۔ اگلے کھلاڑیوں کا نام بھی ‘ر’ سے شروع ہوتا تو ان کا بھی قصہ عامر نے تمام کر دینا تھا۔ اس کے دماغ میں مظہر مجید گھوم رہا تھا۔ اور مظہر میں بھی ‘ر’ توآتا ہی ہے سو وہ سب ‘ر’ والے کھلاڑیوں کو مطہر مجید ہی سمجھے بیٹھا تھا۔ مگر دھونی بہت کائیاں نکلا۔ کوہلی اور یوراج کو بھیج کے بھیج کے ‘ر’ کا تسلسل ہی توڑ دیا۔ ورنہ ہمارے تو پچاس ہی کافی تھے ان کے لئے۔ ادھر آفریدی نے بھی خود بائولنگ نہ کرائی تا کہ ان کو ان کے دھوکے کا بدلہ دیا جا سکے۔ اب رنز جب پورے ہونے لگے تو محمد سمیع نے بھی لہو لگا کر شہیدوں میں نہ صرف نام لکھوا لیا بلکہ اگلے میچ کے لئے جگہ بھی چکی کر لی۔
(پاکستان بمقابلہ بھارت ایشیا کپ ٹی ٹونٹی)

Advertisements

اپنی رائے سے نوازیئے۔

Please log in using one of these methods to post your comment:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s